پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتو ں میں ر د و بد ل

حکومت نے پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتو ں میں ر دو بد ل کا اعلا ن کر تے ہوئے پٹر ول 7.06 رو پے اور مٹی کا تیل 11.88 رو پے سستا جبکہ ہا ئی ڈیز ل 5 پیسے اور لائٹ ڈیز ل 9.37 رو پے فی لیٹر مہنگا کردیا اس طر ح اب پٹر ول کی نئی قیمت 74.52 رو پے اور مٹی کا تیل 35.56 رو پے فی لیٹر ہو گی نئی قیمتو ں کا وز ا رت خز انہ نے او گر ا کی جا نب سے بھیجی گئی سمر ی کے بعد اعلا ن کیا جس کا نو ٹیفکیشن جا ری ہو گیا اور جو نا فذ العمل ہو گیا۔
حکومت کاپٹر ول اور مٹی کا تیل سستا کر نے کا اقد ام قا بل تعر یف ہے اس طر ح اس سے عوا م کو تھو ڑ ا بہت ریلیف مل جا ئے گا اگر حکومت ڈیز ل کی قیمت میں بھی کمی کر تی تو او ر بہت بہتر ہو تا کیو نکہ زیا دہ ترٹر ا نسپو رٹ جن میں بسیںاور ٹر ک شا مل ہیں میں ڈیز ل ہی استعما ل ہو تا ہے ڈیز ل سستا کرنے سے ٹر ا نسپو ر ٹ کے کر ایے کم ہو جا تے جس سے عوا م کو بہتر ریلیف ملتا اس کے علا وہ عا لمی منڈی کے لحا ظ سے مذکو رہ قیمتو ں میں کمی اب بھی کم ہے کیو نکہ عا لمی منڈی میں پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتیں بہت ہی کم ہوئی ہیں ا س لیے حکومت کو اس سلسلے میں عو ام کو بھر پو ر ریلیف دینا چا ہیئے اس وقت ملک میں مہنگا ئی اپنے عروج پر ہے اور اس کے سا تھ کو رونا وا ئر س کی وبا ءکے باعث جو سما رٹلا ک ڈاﺅن نا فذ ہے اس سے بھی غر یب عوا م کو شد یدما لی مشکلا ت کا سا منا ہے اگر عا لمی منڈی میں پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتو ں میں کمی ہو گئی ہے تو اس کا پو ر ا پو ر ا فا ئد ہ عوا م کو پہنچا نا چا ہیئے کیو نکہ ہما رے ہا ں جب پٹرو لیم مصنو عا ت کی قیمتیں عا لمی منڈ ی میں بڑ ھتی ہیں تو اس پر فو ری طو ر پر عمل در آمد کرکے یہا ں بھی قیمتیں بڑ ھا دی جا تی ہیں لیکن جب وہا ں کم ہو تی ہیں تو یہا ں اس پر
فو ری طو ر پر نہ صر ف عمل در آ مد میں سستی کی جا تی ہے بلکہ اس مد میں ریلیف کم دیا جا تا ہے جو کہ قا بل افسو سبا ت ہے اس کا ثبو ت پٹر ول پمپو ں میں پٹر ول سستا ہونے کے بعد پٹر ول کی عد م دستیا بی ہے جبکہ مہنگا
ہو نے پر ایسا نہیں ہوتا حکومت کو اس سلسلے میں اپنی پا لیسیو ں کو تبد یل کر نا چا ہیئے اور عوا م کا ہر لحا ظ سے خیا ل کرنا چا ہیئے کیو نکہ عوام ہی وہ طا قت ہے جو حکومتو ں کو منتخب کر تی ہے اگر ان کا خیا ل نہیں رکھا جا ئے گا تو پھر حکومتوں کا بننا مشکل ہو جا ئے گا۔
ایک اور با ت کا ذکر کرنا یہا ں ضروری ہے کہ ہما رے ہا ں یہ بھی بد قسمتی رہی ہے کہ ہما رے ہا ں ٹر ا نسپو ر ٹر ز بھی پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتو ں میں کمی کا فا ئد ہ عو ا م کو نہیں دیتے بلکہ وہ بھی اپنے حصے میں ڈال لیتے ہیں لیکن اس کے مقا بلے میں جب پٹر ولیم مصنوعا ت مہنگی ہو تی ہیں تو وہ فو راً اپنے کر ایو ں میں اضا فہ کر دیتے ہیں جبکہ پٹر ولیم مصنو عا ت سستا ہونے کی صو رت میںکر ایوں میں کمی نہیں کی جا تی۔اس لیے یہا ں ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت کو اس جا نب خصو صی تو جہ دینی چا ہیئے اس کو ٹر ا نسپو ر ٹر ز پر چیک اینڈ بیلنس رکھنا چا ہیئے تا کہ عوا م کوبھر پو ر ریلیف مل سکے اس طر ح جہا زو ںاور ٹر ینو ں کے کر ایو ں میں بھی فو ری طو ر پر کمی کر نی چا ہیئے جو کہ اکثر نہیںکم نہیں ہو تیںیہ قا بل افسو س با ت ہے کیو نکہ یہ ادا رے تو وفا قی حکومت کے ما تحت ہیں ان پر عمل کر وانا وفا قی حکومت کا کا م ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*