تازہ ترین

پی ایس ایل کے ملتوی میچز ہونے چاہئیں، مصباح

لاہور (سپورٹس ڈیسک)پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مصباح الحق نے کہا ہے ہے میری رائے میں پاکستان سپر لیگ کے ملتوی شدہ میچز ہونے چاہئیں،پی ایس ایل کا معیار بڑا شاندار رہا ہے، پی ایس ایل فائیو بالروں کے لیے ٹف رہی ہے بیٹسمینوں کو ان پچز پر آسانی رہی،آئی سی سی ٹیسٹ چمپئن شپ کے میچز مکمل ہونے چاہیے، سب ٹیموں کے میچز مکمل ہونے کے بعد ہی آئی سی سی ٹیسٹ چمپئن کا فیصلہ ہونا چا ہیے،ہمارے کھلاڑی گھروں میں میچز کی ویڈیوز دیکھ رہے ہیں اور خود کو فٹ رکھ رہے ہیں ، لاک ڈاﺅ ن کی وجہ سے کچھ کھلاڑی ٹریننگ کے لیے سامان اکٹھا نہیں کر سکے۔قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مصباح الحق نے وڈیو پریس کانفرنس کے دوران پاکستان سپر لیگ سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ پی ایس ایل کا معیار بڑا شاندار رہا ہے، پی ایس ایل فائیو بالروں کے لیے ٹف رہی ہے بیٹسمینوں کو ان پچز پر آسانی رہی۔انہوں نے کہا کہ لاہور قلندرز کا دلبر حسین ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کا اچھا بالر بن سکتا ہے دلبر حسین نے بہت متاثر کیا جبکہ شرجیل خان کے فٹنس سے خوش نہیں ہوں فٹنس آپ کے ہاتھ میں ہے۔قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ نے کہاکہ ایک میچ جیتنے سے اسلام آباد یونائیٹڈ آگے جا سکتی تھی، نہیں جاسکے تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ اچھا کوچ نہیں رہا، کسی کو بھی کچھ کہنے کا حق حاصل ہے اس سے فرق نہیں پڑتا پازیٹو چیزوں سے سیکھنے کے کوشش کرتا ہوں۔انہوںنے کہاکہ مجھے افسوس نہیں ہے کہ اسلام آباد یونائیٹڈ کی کوچنگ کیوں کی، اسلام آباد یونائیٹڈ آخری لمحات تک ٹاپ فور میں شامل رہی تمام ٹیمیں یکساں تھیں اور اسلام آباد یونائیٹڈ نے مجموعی طور پر اچھی کرکٹ کھیلی کچھ حالات ہمارے حق میں نہیں تھے۔مصباح الحق نے ویڈیو کانفرنس کے دوران کہا کہ آئی سی سی ٹیسٹ چمپئن شپ کے میچز مکمل ہونے چاہیے، سب ٹیموں کے میچز مکمل ہونے کے بعد ہی آئی سی سی ٹیسٹ چمپئن کا فیصلہ ہونا چا ہیے۔مصباح الحق نے کورونا وائرس کے پیش نظر جاری لاک ڈاﺅن سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورت حال میں سب کے لیے دعائیں ہیں کہ جلد زندگی نارمل ہو ، ہم نے خود کیسے حفاظت کرنا ہے اور دوسروں کی کیسے کرنا ہے آج کل یہ بہت اہم ہے ، ہماری زمہ داری ہے کہ ہم احتیاطی تدابیر اختیار کریں۔انہوں نے کہا کہ ہماری کرکٹ کو ہی نہیں کورونا وائرس سے پوری زندگی کو نقصان ہوا ہے اور دنیا متاثر ہوئی ہے، اس وقت کھیل سے بڑھ انسانی جانیں ہیں ہمیں اس سے لڑنا ہے کہ انسانی جانیں کیسے بچاناہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*