تازہ ترین

چینی ڈاکٹر و ں کی ٹیم اور دیگر طبی سا ما ن کی پا کستا ن آمد

پا کستا ن کے سب سے بہتر ین دوست اور ہمسا یہ ملک چین نے پا کستا ن میں کو رو نا مر ض کے آ نے سے نمٹنے کیلئے نہ صر ف ایک ڈاکٹر و ں کی ٹیم جو دیگر سٹا ف پر مبنی ہے کے سا تھ سا تھ طبی سا مان جس میں 56 ہز ار کو رو نا ٹیسٹنگ کٹس بھی شا مل ہیں پا کستا ن بھیجا ہے مذکو رہ سا ما ن علی با با اور جیک ما فا ﺅ نڈ یشن کی جا نب سے بھیجا گیا ہے جو ایک طیا رہ لے کر کر اچی پہنچ گیا جہا ں اس کو گو رنر سند ھ محمد اسما عیل نے وصول کیا اس مو قع پر گو ر نر سند ھ محمد اسما عیل نے مشکل کے اس وقت میں پا کستا ن کا سا تھ دینے پر چین کا شکر یہ ادا کیا ہے۔
چین کی جا نب سے مذکو رہ سا ما ن اور ڈاکٹروں و دیگر طبی ما ہر ین پر مشتمل ٹیم کا پا کستان بھیجنا بلا شبہ قا بل تعر یف اقد ام ہے چین نے مذکو رہ اقد ا م کر کے ایک سچے دوست ملک ہونے کا ثبو ت دیا ہے اس میں کوئی شک نہیں کہ چین پا کستا ن کا ایک بہتر ین دو ست ملک ہے جس نے ہر مشکل وقت میں پا کستا ن کا بھر پو ر سا تھ دیا ہے ملک میں سیلا ب ہو ،زلز لہ یا کوئی اور قد رتی آفت ہو چین ہر مشکل گھڑ ی میں پا کستا ن کے سا تھ شا نہ بشا نہ کھڑ ا رہا ہے۔
اس کے علا وہ چین نے پا کستا ن کی ما لی شعبے میں بھی ہر ممکن امد اد کی ہے اس تنا ظر میں اس نے پا کستا ن میں کئی ایک منصو بے شر وع کر رکھے ہیں بعض میں اس کے شیئربھی ہیں ا س کا سب سے بڑ ا منصو بہ سی پیک ہے جو گو ادر سے شر وع ہو کر پو رے ملک میں پھیلا ہو ا ہے اس کی تکمیل سے نہ صر ف بلوچستان بلکہ پو ر ے ملک کی عوام کو معا شی طو ر پر بڑ ا فا ئد ہ پہنچے گایہ منصوبہ خطے کا گیم چینجر کی حیثیت رکھتا ہے اس منصو بے سے ملک خصو صاً بلوچستان میں رو ز گا ر کے بڑ ے مو اقع پید ا ہو ں گے چو نکہ اس وقت صو بے میں بےرو ز گا ری بہت زیا دہ ہے حا لانکہ صو بے میں ہز اروں خا لی آسا میا ں مو جو د ہیں لیکن نہ گذشتہ حکومتوں نے اور نہ ہی مو جو دہ حکومت اس سلسلے میں کوئی اقد ا ما ت کر رہی ہے یہا ں سی پیک منصو بے کے آغا ز سے بے رو ز گا ر نو جو انوں کو نو کر یا ں ملنے کی امید پید ا ہو گئی ہے جو کہ خو ش آئند ہے۔
کو رونا وا ئر س ایک مو ذ ی مر ض ہے اور جس کا آغاز چین کے علا قے دو ہا ن سے ہو ا اور اس نے وہا ں بڑ ے پیما نے پر تبا ہی مچا د ی جس کے نتیجے میں لا تعد اد ہلا کتیں بھی ہوئیں ا س کے بعد اس مر ض نے دنیا کے اکثر مما لک کو اپنی لپیٹ میں لے لیا اور اس طرح یہ بڑ ھتا گیا پا کستا ن میں بھی اس مو ذ ی مر ض سے جا نی نقصا ن ہو ئے ہیں اس کے سا تھ سا تھ کا فی لو گوں میں اس کے آ ثا ر نمو دا ر ہو ئے ہیں جو قر نطینہ سنٹر ز میںزیر علا ج ہیں چو نکہ اس مر ض کی با قا عد ہ کوئی ویکسین نہیں بن سکی ہے اس لیے اس کا علا ج احتیا ط ہی ہے کیونکہ احتیا ط کے با عث ہی چین نے اس مو ذ ی مر ض پر بھر پو ر قا بو پا لیا ہے اب وہ اس مر ض کا مقا بلہ کر نے کے لیے پا کستا ن کی امد ادکر رہا ہے جو کہ قا بل تعر یف اقد ا م ہے اس کے مثبت اثر ات بر آمد ہو نے کی تو قع ہے جس سے کو رونا کا خا تمہ ممکن ہو سکے گا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*