کورونا وائرس تعصب اور نفرت کا باعث بننے لگا‘اٹلی میں پُرتشددواقعات

Coronavirus

روم (م ڈ)چین میں جان لیوا نئے کورونا وائرس پھوٹنے کے بعد یورپی ملک اٹلی میں چینی سیاحوں، چینی نںاد اطالوی باشندوں سمیت ایشیائی ممالک سے تعلق رکھنے والے افراد کو نفرت پر مبنی امتیازی سلوک اور تشدد کے واقعات کا سامنا ہے۔ڈائریکٹر میوزک سکول کی چین، کوریا اور جاپان سے تعلق رکھنے والے طلبہ کوچینی وبا کورونا وائرس کی وجہ سے معطل کرنے کی دھمکی۔الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق چینی نژاد اطالوی باشندوں پر مشتمل کمیونٹی اور انسانی حقوق کے اراکین کے مطابق چینی سیاحوں سمیت ایشیائی نڑاد شہریوں کو تشدد، نفرت، امتیازی سلوک کا سامنا اور ہراساں کیا جارہا ہے۔رپورٹ کے مطابق ان واقعات میں حملہ، جنسی تشدد، توہین اور کاروبار کا بائیکاٹ شامل ہیں۔اٹلی کے شمالی شہر بولونہ میں 15 سالہ چینی نژاد اطالوی لڑکے کو مقامی لڑکوں نے تشدد کا نشانہ بنایا اور کہا کہ تم اٹلی میں کیا کررہے ہو! چلے جاو¿، تم ہمارے لیے بیماری لارہے ہو۔اٹلی کے جنوبی شہر کگلیاری کے ہسپتال میں زیر علاج 31 سالہ فلپائنی شخص نے ایک مقامی اخبار کو بتایا کہ اس پر اطالوی نوجوانوں کے ایک گروپ نے حملہ کیا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*