ٹرمپ کی کشمیر پر ثالثی کی پیشکش پر عملدرآمد چاہتے ہیں، پاکستان

اسلام آباد(این این آئی)ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے کہاہے کہ امریکی صدر نے ایک سے زائد مرتبہ کشمیر پر ثالثی کی پیش کش کی اور ہم اس پر عملدرآمد چاہتے ہیں،بھارتی اقدامات خطے میں امن و سلامتی کے مسائل پیدا کر رہے ہیں، کشمیر کے دنیا سے رابطے بدستور منقطع ہیں، پاکستان کشمیری عوام کی سفارتی سیاسی اور اخلاقی حمایت جاری رکھے گا،ایف اے ٹی ایف کے حوالے سے پاکستان اپنی ذمہ داریاں ہوری کر رہا ہے،اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل 16 فروری کو پاکستان کا دورہ کریں گے،ویانا میں عالمی نیوکلیئر سیکیورٹی کے حوالے سے کانفرنس منعقد کر رہی ہے،پاکستان بھی اس کانفرنس میں شرکت کرے گا،احسان اللہ احسان کی ترکی میں مبینہ موجودگی کے حوالے سے معاملے کووزارت داخلہ دیکھ رہی ہے۔ جمعرات کو ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے صحافیوں کو ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ لاک ڈاﺅن کے 193 ویں روز مقبوضہ کشمیر کے عوام پر مظالم کا سلسلہ جاری ہے،بھارت مسلسل 2003 کے جنگ بندی انتظامات کی خلاف ورزی کر رہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ حالیہ ایل اور سی کی بھارتی خلاف ورزیوں میں ایک شہادت ہوئی۔ انہوںنے کہاکہ بھارتی سفارتی حکام کو بلا کر سخت احتجاج ریکارڈ کرایا گیا۔ انہوںنے کہاکہ ہم بارہا عالمی برادری کو بھارت کی جانب سے کسی بھی متوقع فالس فلیگ آپریشن کی تنبیہ کر رہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ ایف اے ٹی ایف کے حوالے سے پاکستان اپنی ذمہ داریاں ہوری کر رہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ ترک صدر رجب طیپ اردوان اسلام آباد کا دو روزہ دورہ کر رہے ہیں،دورے میں ان کے ہمراہ متعدد اراکین پارلیمان اور سرمایہ کار شامل ہیں۔ انہوںنے کہاکہ ترک صدر اردوان (آج) جمعہ 14 فروری کو پارلیمانی اجلاس سے خطاب کریں گے،وہ دورے کے دوران صدر عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان سے ملاقاتیں کریں گے۔ انہوںنے کہاکہ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل 16 فروری کو پاکستان کا دورہ کریں گے،اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل لاہور کادورہ بھی کریں گے،وہ گوردوارہ کرتارپور صاحب بھی جائیں گے۔ ترجمان نے کہاکہ ویانا میں عالمی نیوکلیئر سیکیورٹی کے حوالے سے کانفرنس منعقد کر رہی ہے،پاکستان بھی اس کانفرنس میں شرکت کرے گا۔ انہوںنے کہاکہ ایف اے ٹی ایف کے حوالے سے پر امید ہیں ہمارے عالمی. شراکت دار. ہمارے ساتھ کھڑے ہیں،پاکستان نے اقوام. متحدہمکے ڈیفنس سیکیورٹی کمیشن کا نوٹیفیکیشن دیکھا ہے۔ انہوںنے کہاکہ بھارت کو جدید نظام کی فراہمی سے پاکستان ڈسٹرب ہے،اس سے خطے میں ہتھیاروں کا توازن متاثر ہو گا۔ انہوںنے کہاکہ کرونا وائرس سے متاثرہ چار پاکستانی طلبہ کاعلاج جاری ہے۔ انہوںنے کہاکہ احسان اللہ احسان کی ترکی میں مبینہ موجودگی کے حوالے سے معاملے کووزارت داخلہ دیکھ رہی ہے۔ انہوںنے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں گذشتہ 6 ماہ سے مکمل لاک ڈاون اور کمینیکیشن شٹ ڈاﺅن ہے،ہم نے سید علی گیلانی کے صحت کے حوالے سے رپورٹس دیکھی ہے۔انہوںنے کہاکہ ہمیں بتایا گیا ہے کہ اب ان کی حالت معتدل ہے،ہم نے دہلی میں انتخابات کی رپورٹس دیکھی ہیں،ہم بھارتی انتخابات پر تبصرہ نہیں کرتے تاہم بی جے پی نے انتخابات میں پاکستان دشمنی کا کارڈ استعمال کیا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*