یوٹیلٹی سٹورز پر اربوں کاپیکج بے سود ،پالیسی پر نظر ثانی کی جائے ‘ آل پاکستان انجمن تاجران

لاہور( سپورٹس ڈیسک)آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر اشرف بھٹی نے یوٹیلٹی سٹورز پر اربوں روپے کے پیکج کو بے سود قرا ردیتے ہوئے کہا ہے کہ سبسڈی کے حوالے سے پالیسی پر نظر ثانی کرنے کی ضرورت ہے ، مہنگائی کیو جہ سے قیمتیں جس سطح پر پہنچ گئی ہیں وہاںپر سبسڈی کی بھی کوئی اہمیت نہیں رہی اس لئے حکومت مہنگائی کی شرح میں کمی کرے تاکہ عوام کی قوت خرید بحال ہو سکے ۔ ان خیالات کا اظہارا نہوںنے اپنے دفتر میں کریانہ مرچنٹ ایسوسی ایشن کے عہدیداروں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ اشرف بھٹی نے کہا کہ ملک بھر میں آبادی کے تناسب سے یوٹیلٹی سٹورز کی تعداد انتہائی کم ہے اس لئے کوئی بھی شخص ایک کلو چینی یا دال کی خریداری کےلئے کئی کلو میٹر کا سفر طے نہیں کرتا ۔ حکومت کو چاہیے کہ یوٹیلٹی سٹورز پر دئیے جانے والے سبسڈی پیکج کو ملوں اور فیکٹریوں کو براہ راست دیا جائے اور مشاورت سے سرکاری قیمتیں طے کی جائیں اور اس کے بعد جو بھی مل یا دکاندار ناجائز منافع خوری کرے تو اسے کڑی سے کڑی سزا دی جائے ۔عام عوام کو بلا تفریق ریلیف دینے کےلئے سبسڈی پیکج کو اوپن مارکیٹ تک لایا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت فی الفور مہنگائی کی شرح میں 40فیصد تک کمی کر کے قیمتوں کو کم از کم دو سال کے لئے منجمد کرے تاکہ عوام کو حقیقی معنوں میں ریلیف مل سکے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*