کوئٹہ ،مسجد کے اندر دھماکہ، ڈی ایس پی سمیت 15 نمازی شہید 19 زخمی

Quetta Masjid Blast During Prayers

کوئٹہ (این این آئی/ خ ن) کوئٹہ میں مسجد کے اندرخود کش بم دھماکے کے نتیجے میں ڈی ایس پی سمیت 15نمازی شہید جبکہ 19 زخمی ہوگئے دھماکے سے مسجد کو شدید نقصان پہنچا۔پولیس کے مطابق جمعہ کی شام کوئٹہ کے علاقے اسحاق آباد میں واقع مدرسہ دارالعلوم شریعہ کی مسجد میں اسوقت خود کش دھماکہ ہوا جب مغرب کی نماز ادا کی جارہی تھی دھماکے کے نتیجے میں ڈی ایس پی امان اللہ،امام مسجد سمیت15نمازی شہید جبکہ 19 زخمی ہوگئے۔ترجمان سول ہسپتال کوئٹہ کے مطابق جاں بحق ہونے والوں میں حفیظ الرحمن ولد حاجی عبداللہ ، امان اللہ ولد حاجی عبدالنبی ،رفیع اللہ ولد عبدالخالق ، احمداللہ ولد محمد سرور ، اللہ محمدولد عبدالبصیر، کاکا ولد نیک محمد، مطیع اللہ ولد امان ، جہانگیر عرف جان محمد ولد گل خان اور7نامعلوم افراد شامل ہیں جبکہ ز±خمیوں میں عظمت اللہ ، عبدالہادی ، معاذ اللہ ،حکمت خان ، شمس اللہ ، انعام اللہ ، قدرت اللہ ، جنید، ذاکراللہ ،مغفور اللہ ، مولوی محمد ،جمیل احمد، سیف اللہ ،اکبر خان ، عبداللہ جان ، عبدالغفور ، عزیز اللہ ، عبداللہ شامل ہیں۔دھماکے کی اطلاع ملتے ہی پولیس ،ایف سی کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی نعشوں اورزخمیوں کوفوری طور پر ہسپتال پہنچادیا گیا جہاں زخمیوںکو فوری ابتدائی طبی امداد فراہم کی گئی دھماکے سے مسجد کے اندرونی حصے کوشدیدنقصان پہنچا ۔ دھماکے کے بعد پولیس اور ایف سی کے اعلیٰ حکام موقع پرپہنچ گئے اور فوری طور پر بم ڈسپوزل کے عملے کو طلب کرلیاگیا ہے علاقے کو گھیرے میں لیکر تحقیقات شروع کردی گئی ہیں ،پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ابتدائی شواہد سے لگتا ہے کہ دھماکہ خود کش ہے تاہم تحقیقات کے بعد ہی حتمی طور پر کچھ کہا جاسکتا ہے۔بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں جنوری کے پہلے ہفتے کے دوران 2بم دھماکوں کے نتیجے میں 17افراد شہید جبکہ37افراد زخمی ہوچکے ہیں۔ در یں اثنا ءوزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے غوث آباد کے علاقے کی مسجد میں ہونے والے بم دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے دھماکے میں ڈی ایس پی حاجی امان اللہ اور دیگر افراد کے شہید اور زخمی ہونے پر رنج وغم کا اظہار کیا ہے، انہوںنے کہا ہے کہ نمازیوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنانے والے عناصر کا کوئی مذہب اور قوم قبیلہ نہیں وہ صرف دہشت گرد ہیں اور سخت ترین سزا کے حقدار ہیں، وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ ملک دشمن قوتیں ایک مرتبہ پھر بلوچستان میں دہشت گردی کے ذریعہ عدم استحکام پیدا کرنا چاہتی ہیں تاہم سیکیورٹی فورسز اور عوام کی قربانیوں سے قائم ہونے والے امن کو کسی صورت خراب نہیں ہونے دیا جائے گا اور دہشت گردی میں ملوث عناصر کو کیفرکردار تک پہنچایا جائے گا، وزیراعلیٰ نے آئی جی پولیس اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کو کوئٹہ کے سیکیورٹی پلان کا ازسرنو جائزہ لے کر اسے مزید موثر بنانے کی ہدایت کی ہے، وزیراعلیٰ نے شہداءکے خاندانوں سے تعزیت اور ہمدردی کے اظہار کرتے ہوئے شہداءکے درجات کی بلندی اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*