ملک میں سر ما یہ کاری نہ آنے کی بڑی وجہ کر پشن

وزیر اعظم عمران خان نے دورہ چین کے دوران چا ئنہ کونسل فا رو یر ومو شن آف انٹر نیشنل ٹر یڈ میں ایک تقر یب سے خطا ب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستا ن میں امن وامان کی صورتحال بہتر ہوئی ہے مو جو دہ وقت چین سے سیکھنے کا ہے ملک میں سر ما یہ کاری نہ آنے کی بڑی وجہ کر پشن ہے چینی صدر نے کر پشن کیلئے جنگ کی چین میں 4 ہزار کر پٹ وز راءکو جیل بھیجا گیا کا ش میں 500 افراد کو بھیج سکتا انہو ں نے کہا کہ سی پیک کے تحت گو ادر کا پہلا مر حلہ مکمل ہو گیا ہے۔
وزیر اعظم عمر ان خان کا ملک میں سر ما یہ کا ری نہ آنے کی بڑی وجہ کرپشن کا انکشا ف کرنا ایک بہت بڑا لمحہ فکر یہ ہے کیونکہ ملک میں سا بقہ حکمر انوں نے ایک بڑی کرپشن کی ہے جس کی وجہ سے اس وقت ملک کے دو سا بق وزر اءاعظم نو از شر یف اور شا ہد خا قا ن عبا سی ایک صدر مملکت آصف علی زرداری ایک قا ئد حزب اختلا ف قومی اسمبلی سید خو رشید شا ہ سمیت دیگر افراد جیلو ں میں بند ہیں اس طر ح مو جو دہ قا ئد حزب اختلا ف اور سا بق وزیر اعلیٰ پنجا ب میا ں محمد شہباز شر یف پر بھی کر پشن کی وجہ سے مقد ما ت درج ہیں اور وہ اب ضما نت پر ہیں ا س کے سا تھ سا تھ ان کے بیٹے حمز ہ شہبا ز شر یف جو پنجا ب اسمبلی میں قا ئد حزب اختلا ف ہیں بھی مقد مات کا سا منا کر رہے ہیں یہ صورتحال بلا شبہ ملک کے لیے بہت بڑی تشو یش کی با ت ہے کہ یہاں سر ما یہ کا ر سر ما یہ کا ری کرنے کے لیے تیا ر نہیں۔
وزیر اعظم عمر ان خان نے کر پشن کے خا تمے کیلئے چین کی جو مثال دی ہے وہ حقیقت پر مبنی ہے کہ چین جو پاکستا ن سے بعد میں آزاد ہو ا لیکن اس کی عوام اور حکومت نے اس کی تر قی کے لیے سر تو ڑ کو ششیں کیں اور وہاں کرپشن کا خا تمہ کیا گیا جس کے باعث وہ اس وقت دنیا کے تر قی یا فتہ مما لک میںسر فہر ست ہے اگر وہاں کی تر قی 4 ہزار کر پٹ وزراءکو جیل بھیجنے سے ہوئی ہے تو یہا ں بھی ایسے ہی اقدامات کرنا بہت ضروری ہیں یہا ں بھی اس سلسلے میں کسی بھی قسم کا کوئی کمپر و ما ئز نہیں کر نا چا ہیئے اور ملک سے کر پشن کے خا تمے کیلئے ہر ممکن اقدامات کرنے چا ہئیں چا ہے اس کے لیے اسے جتنی بھی گر فتا ریاں کر نی پڑ یں کیونکہ کر پشن ایک ناسور ہے جو ملک کی بنیا د و ں کو کھو کھلا کر رہا ہے اس لیے اس کا خاتمہ انتہا ئی نا گز یر ہو چکا ہے حکومت نے جن لو گوں کو کر پشن کے الزام میںگر فتا ر کیا ہے یا اس کے بعد گر فتا ر کیا جا ئے گا سے ملک سے لو ٹے ہوئے پیسو ں کو فوری طور پر واپس لانے کے اقدامات کرنے چا ہئیں تا کہ ملک نہ صر ف معا شی بحران سے نکل آئے بلکہ اس کے بعد پھر کوئی بھی کر پشن کرنے کے با رے میں نہ سو چے حکومت کو اس سلسلے میں کسی بھی قسم کا کوئی کمپر و ما ئز نہیں کر نا چا ہیئے اگر ایسا کیاگیا تو پھر یہ ملک ایسے ہی رہے گا اپنے قر یبی ہمسا یہ چین جیسا کبھی نہیں بن سکے گا سی پیک کے تحت گو ادر کے پہلے مر حلہ مکمل ہو نا قا بل تعر یف ہے با قی کا م میں تیز ی لا نی چا ہیئے۔
امید ہے کہ وزیر اعظم عمر ان خان ملک سے کر پشن کی لغت کو ہمیشہ کیلئے ختم کرنے میںکا میا ب ہو جا ئیں گے کیونکہ اس میں ہی ملک کی بقا ءہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*