قومی شا ہر ا ہ پر حا دثات میں اضافہ

کوئٹہ کر اچی شا ہراہ پر ٹر یفک حا دثات میں مسلسل اضافہ ہو تا جا رہا ہے جس کے نتیجے میں اب تک کئی قیمتی جانیں ضا ئع اور زخمی اور اس کے سا تھ سا تھ قیمتی گا ڑیا ں بھی تبا ہ ہو ئی ہیں گذشتہ روز بھی دو حا دثات ہوئے ہیں جن میں17 افراد جا ں بحق اور 21 زخمی ہو ئے ہیں۔
کوئٹہ کراچی شا ہر اہ پر حا دثات ایک عر صے سے ہو رہے ہیں جس کی کئی وجو ہات ہیں جن میں شا ہراہ کا دور ویہ نہ ہونا سب سے بڑی وجہ ہے بڑے افسو س کی با ت یہ ہے کہ اس شا ہر اہ پر بے شما ر گا ڑیو ں کا گز ر ہوتا ہے لیکن حکومت اور متعلقہ محکمے اس کو دور رویہ بنا نے کیلئے کوئی اقدامات کرنے کو تیا ر نہیں ہیں حالانکہ جیسا کہ اوپر در ج کیا جا چکا ہے کہ اس شا ہرا ہ پر ٹر یفک کے بے شما ر حا دثا ت ہو رہے ہیں جواب معمول بن گئے ہیں اس شا ہر اہ پر جب بھی کوئی ©حا دثہ ہوتا ہے تو اس پر رد عمل ضرور آتا ہے جس پر اس کو دور ویہ بنا نے کا مطا لبہ ضرور کیا جا تا ہے لیکن پھر اس کے بعد اگلے حا دثے تک خا مو شی ہوجا تی ہے قومی شا ہر اہ پر حا دثات کی ایک اور وجہ گا ڑ یوں کی تیز رفتا ری ہے جس پر کوئی چیک اینڈ بیلنس نہیں ہے چو نکہ شا ہر اہ پر ٹر یفک بہت زیا دہ ہے مختلف کو چز کی کمپنیو ں کی بے شما ر کو چز چلتی ہیں ان کو چلا نے والے ڈ را ئیو رو ں پر کوئی چیک اینڈ بیلنس نہیں ہے کیونکہ ان میں اکثر کئی کئی گھنٹو ں تک مسلسل گا ڑیا ں چلا تے ہیں ان کو سونے کا وقت نہیں ملتا جبکہ بعض گا ڑ یو ں کو اکثر کلینرچلا تے ہیں اس طر ح ڈرا ئیو رو ں کونیند آنے اور انا ڑی ڈرائیو رو ں کی وجہ سے بھی حا دثات ہوتے رہتے ہیں جن میں قیمتی جانو ں کا ضیا ع ہوتا ہے گذشتہ دنو ں قلا ت انتظامیہ نے ایک نجی بس سر وس کا رو ٹ معطل کیا تھا جس کے بہت زیا دہ حاد ثات ہو رہے تھے مگر بعد میں دوبارہ بحال کر کے اس کو کو چز چلانے کی اجاز ت دے دی گئی لیکن اس کے بعد حا دثات کی وہی پو ز یشن بر قرار ہے۔
ہم سمجھتے ہیں کہ قومی شا ہر اہ پر حا دثات کی روک تھام اور قیمتی جانوں کے ضیا ع کو روکنے کیلئے احسن اقدامات کرنے پڑ یں گے جن میں سب سے اولین تر جیح شا ہر اہ کو دورو یہ بنا نا اور گا ڑیو ں کی رفتا ر پر چیک اینڈ بیلنس رکھنا اور اس کے سا تھ سا تھ کو چز کمپنیو ں کو یہ فا صلہ طے کرنے کیلئے ایک ٹائم ٹیبل دینا چا ہیئے اور پھر اس پر چیک اینڈ بیلنس کا سسٹم بھی ہو نا چا ہیئے کیونکہ یہاں ایک دوسرے سے با زی لے جانے کے چکر میں تیز رفتا ری پر کوئی کنٹرول نہیں کیا جاتا اور یہ بھی حا دثات کاسبب بنتے ہیں۔
امید ہے کہ حکومت این ایچ اے اور دیگر متعلقہ ادارے اس اہم مسئلے کو حل کرنے کیلئے احسن اقدامات کر یں گے جو وقت کی اہم ضرورت ہے جب تک ایسا نہیں کیا جا تا تو مذکورہ صورتحال یو ں ہی رہے گی جوکہ صحیح نہیں ہے اس لیئے اس پر پوری جا نفشا نی اور توجہ سے کام کرنے کی اشد ضرورت ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*