کرکٹ اور نجی زندگی کو الگ رکھنا چاہیے ‘ امام الحق، بابر اعظم

لاہور(سپورٹس نیوز )پاکستان کرکٹ ٹیم کے کھلاڑیوں بابراعظم اور امام الحق نے ورلڈکپ میں پاکستان کرکٹ ٹیم کی مجموعی کارکردگی کو تسلی بخش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ویسٹ انڈیز کے خلاف پہلے ہی میچ میں شکست اور سری لنکا کے خلاف میچ بارش کے باعث منسوخ ہونے سے پاکستان ٹیم کو نقصان ہوا،ورلڈ کپ میں شریک ہونے والی دیگر ٹیمیں بھی کھیلنے کے لئے آئی تھیں، کرکٹ اور نجی زندگی کو الگ الگ رکھنا چاہیے ، اگر ہر جگہ ہم پر نظر رکھی جائے گی تو ہم کارکردگی نہیں دکھا سکیں گے،بھارت سے میچ ہارنے کا سب کو دکھ ہوا ۔ امام الحق نے کہا کہ ہم دونوں پہلا ورلڈ کپ تھا جس سے بہت کچھ سیکھا ہے۔پاکستان نے 9 میں سے پانچ میچوں میں کامیابی حاصل کی اور ٹیم نے جس طرح ورلڈ کپ میں کم بیک کیا وہ پہلے کبھی نہیں ہوا تھا۔امام الحق نے کہا کہ انہیں نہیں معلوم کہ چیف سلیکٹرکا بھتیجا ہونے کا فائدہ ہوا یا نقصان مگر وہ ہمیشہ کوشش کرتے ہیں کہ تنقید کا اپنی پرفارمنس سے بہتر جواب دیں۔ انضمام الحق جب بھی آئے ہیں انہوں نے ہمارا مورال بلند کیا ہے ۔ چیف سلیکٹر کی موجودگی کی ٹیم کی اچھی یا بری کارکردگی کے تاثر کی منظق سمجھ نہیں آتی ۔ امام الحق کا کہنا تھا کہ انہیں ٹیم میں جو رول ملتاہے سوفیصد پورا کرنے کی کوشش کرتے ہیں ۔ان کا ٹیم میں مستقبل اللہ کے سوا کوئی نہیں بتا سکتا ہے اور میرا اللہ کی ذات پر بے حد یقین ہے ۔امام الحق کا کہنا تھا کہ بنگلہ دیش کیخلاف بڑا سکور بنانے کی کوشش کی تھی لیکن وکٹ سلو تھا تیز کھیلنے میں مشکل ہورہی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ بدقسمتی سے ورلڈ کپ میں فیلڈنگ اچھی نہیں ہوئی لیکن اس پر جتنی توجہ ہم دے رہے ہیں شاید ہی کوئی اور ٹیم دیتی ہو۔میں اچھی کارکردگی سے اپنے فینز کو مطمئن کرنے کی کوشش کرتا ہوں، میرا رول وکٹ پر کھڑے رہنا ہے اور فخرزمان اٹیکنگ کرکٹ کھیلتے ہیں۔ امام الحق نے کہا کہ میں سٹرائیک ریٹ پر توجہ دے رہا ہوں روہت شرما سے فی الحال میرا مقابلہ قبل ازوقت ہے اس نے دو سو میچ کھیل رکھے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ کپتانی کا فیصلہ پی سی بی نے کرنا ہے میرا کام صرف اچھی کارکردگی دینا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کوچ اور سلیکشن کمیٹی کی مرضی ہوتی ہے کہ کس کو کھیلانا ہے اور کس کو نہیں۔مام الحق کا کہنا تھا کہ تجربہ اچھا تھا، بدقسمتی سے سیمی فائنل تک نہ پہنچ سکے۔ انسان کافی غلطیوں سے سیکھتا ہے میں بھی سیکھوں گا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*