وفاقی پی ایس ڈی پی میں ڈیموں کےلئے فنڈز مختص کرنا خوش آئند

صوبائی وزیر آبپاشی نوابزادہ طارق مگسی نے صوبائی وزیر مواصلات میر محمد عارف جان محمد حسنی سے ملاقات کے دوران صوبے میں جاری ترقیاتی منصوبوں اور وفاقی پی ایس ڈی پی سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا اس موقع پر صوبائی وزیر آبپاشی نوابزادہ طارق مگسی نے کہا کہ وفاقی پی ایس پی ڈی میں ڈیموں کےلئے فنڈز مختص کرنا اوروفاقی ترقیاتی پروگرام میں بلوچستان میں ڈیموں کےلئے کثیر رقم مختص کرنا خوش آئند ہے اس سے آبی وسائل کو مزید بہتر کرنے میں مدد ملے گی انہوں نے مزید کہا کہ سیلاب اور بارشوں کے پانی کو ذخیرہ کرنے کا واحد حل ڈیمز کی بروقت تعمیر میں مظہر ہے ۔
وفاقی پی ایس ڈی پی میں ڈیموں کےلئے فنڈز مختص کرنا بلاشبہ خوش آئنداقدام ہے کیونکہ صوبے میں اس وقت ڈیمز نہ ہونے کے برابر ہیں جن کی وجہ سے بارش کا پانی محفوظ نہیں کیا جاسکتا اور اس طرح یہ پانی ضائع ہوجاتا ہے اگر بلوچستان میں ڈیمز بنائے جائیں تو اس سے بہت بڑا فائدہ ہوگا کیونکہ بلوچستان میں کوئی بڑا دریا نہیں ہے اس لئے زراعت کا دارومدار بارشوں اور برفباری پر منحصر ہے لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ صوبے میں ڈیمز نہیں ہیں جس کی وجہ سے بارشوں کا ذخیرہ نہیں کیا جاسکتا اور زراعت کے استعمال میں بھی پینے کا پانی استعمال کیا جاتا ہے اور اس طرح پینے کا پانی کم ہورہا ہے اس کی زیر زمین سطح گرتی جارہی ہے جو کہ ایک انتہائی خطرناک صورتحال ہے جس پر قابو پانے کےلئے اقدامات کرنے کی اشد ضرورت ہے ۔ ان مےں ایک حل ڈیمز کی تعمیر ہے
اب وفاقی پی ایس ڈی پی میں ڈیموں کےلئے فنڈز مختص کیا گیا ہے جس سے صوبے میں ڈیمز کی تعمیر ممکن ہوسکے گی اور جو آبی وسائل کی بہتر ی میں اہم پیشرفت ہے اس اقدام سے جہاں بارشوں اور سیلاب کے پانی کو ذخیرہ کرکے زراعت میں آبپاشی کے لئے استعمال کیا جاسکے گاوہاں زراعت میں جو پینے کا پانی استعمال ہورہا ہے کی بچت ہوگی اور اسطرح پینے کے پانی کا بحران بھی قابو میں آسکے گا ۔
ہم سمجھتے ہیں کہ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی زیر قیادت صوبائی مخلوط حکومت کا یہ ایک بڑا کارنامہ ہے اس میں وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی ذاتی کاوشیں بھی شامل ہیں کیونکہ وہ بلو چستان کے مسائل سے بخوبی آگاہ اور ان کو حل کرنا بھی جانتے ہیں انہوں نے مذکورہ اقدام میں کامیابی حاصل کرکے صوبے کا ایک بہت بڑا مسئلہ حل کرنے کی جانب پیش رفت کی ہے ۔
ا مید ہے کہ وہ اسی طرح صوبے کے دیگر مسائل کو بھی حل کرنے کےلئے احسن اقدامات کرینگے اگروہ اس میں کامیابیاں حاصل کرتے رہے تو پھر انشاءاللہ وہ وقت دور نہیں جب بلوچستان ترقی کی منازل طے کرتے ہوئے ملک کے دیگر صوبوں کے برابر آجائے گا اگر وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے دور حکومت میں ایسا ہوجاتا ہے تو یہ نہ صرف اس کی بڑی کامیابی ہوگی یہ تاریخ میں سنہرے حروف سے لکھا جائے گا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*