حکومت کو مشکل حالات میں مشکل فیصلے کرنے پڑر ہے ہیں ،صد ر مملکت

لاہور (اے این این) صدر مملکت عارف علوی نے کہا ہے کہ حکومت تجارتی اور صنعتی شعبوں سے متعلق مسائل سے آگاہ ہے ،کاروباری برادری کو سازگار کاروباری ماحول مہیا کرنے کے لےے تمام تر اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ اقتصادی ترقی میں نجی شعبے خصوصی طور پر اےف پی سی سی آئی کے مثبت کردار کی تعرےف کرتے ہوئے کہاکہ مشکل اقتصادی حالات میں مشکل فیصلے کرنے پڑ رہے ہیں لیکن حکومت معیشت کو بہتر کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش کر رہی ہے۔ تجارتی خسارے کو کم کرنے کےلئے غیر ضروری اور لگثرری اشیاءکی درآمد کو روکنا حکومتی پالیسی کی اولین ترجیح ہے۔ان خیالات کا اظہار صدر مملکت پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری( اےف پی سی سی آئی) کے صدر انجینئردارو خان اچکزئی اور ریجنل چیئرمین عبدالرو¿ف مختار کی قیادت میں اےف پی سی سی آئی پنجاب کے وفد سے اےوان صدر میں خصوصی اجلاس کے موقع پر کیا۔اجلاس میں پنجاب کے تمام ٹریڈ چیمبرز کے صدور اور اےف پی سی سی آئی کے عہداداران نے شرکت کی۔انہوں نے مزید کہاکہ حکومت ایکسپورٹ کرنے والی انڈسٹری کو گیس کی رعایتی ٹیرف کی فراہمی کو یقینی بنا کر کاروبار کرنے کی لاگت کو کم کرنے کی کوشش میں مصروف ہے۔اس کے علاوہ حکومت نے ایکسپورٹ کرنے والے سیکٹرز ٹیکسٹائل ،لیدر، کارپٹز، سرجیکل اور سپورٹس گڈز کے لےے سیلز ٹیکس کی صفر ریٹنگ پالیسی متعارف کروائی ہے۔ صدر پاکستان نے مزید کہاکہ تجارتی خسارے کو کم کرنے اور ترقیاتی بجٹ کے لےے زیادہ فنڈز مختص کرنے کے لےے اےف پی سی سی آئی کوکاروباری برادری کو اپنے تمام ٹیکسز ادا کرنے کے لئے حوصلہ افزائی کرنے میں اپنا فعال کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے۔اےف پی سی سی آئی ملک کی تمام ٹریڈ باڈیز کی واحدنمائندہ تنظیم ہے،وہ اپنے اراکین کو تجارت کے قوانین پر عمل کرنے کی طرف راغب کرئے ۔ اےف پی سی سی آئی کے صدر انجینئردارو خان اچکزئی اور ریجنل چیئرمین عبدالرو¿ف مختار نے کہاکہ حکومت اےف پی سی سی آئی کے ساتھ اےک خصوصی کیمونیکشن چینل قائم کرئے کیونکہ اےف پی سی سی آئی اپیکس باڈی ہے جو دوستانہ کاروباری پالیسوں کو تیار کرنے میں مدد دے گا۔ کاروبار کے فروغ سے بے روزگاری اور غربت کا خاتمہ ہو گا۔ عبدالرو¿ف مختار نے مزید کہاکہ اےف پی سی سی آئی ریجنل آفس لاہور نے کاٹیج اور سمال انڈسٹری کے فروغ کے لئے بھی کام شروع کیا ہے۔ اےف پی سی سی آئی نے کاٹیج اور سمال انڈسٹری کی اہمیت کو سمجھتے ہوئے خصوصی اقتصادی زونوں میں کاٹیج اور ایس ایم ایز سیکٹر کے لئے خصوصی انڈسٹریل اسٹیٹ قائم کرنے کا اےک جدید آئیڈیا متعارف کروایا ہے ۔انہوں نے مزید کہاکہ کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دےنے کے لئے اےف پی سی سی آئی ریجنل آفس لاہور اور وہ تمام ضلعی ٹریڈ چیمبرز جن کے پاس ذاتی آفسز نہیں ہے ان کو آفسز کے لئے حکومت کی طرف سے زمین الاٹ کی جائے۔قومی معیشت میں ایک نئی سمت دینے کے لئے امپورٹ کو کم کرنے اورمقامی صنعت کی حوصلہ افزائی کا یہ بہترین وقت ہے۔مقامی صنعت کو فروغ دینے کی پالیسی سے ملازمتوں کے مواقعے پیدا ہو گئے اور امپورٹ کی بھی حوصلہ شکنی ہو گئی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*