کوئٹہ اور چمن میںدہشتگر دی کے وا قعات

صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں ایک با ر پھر دہشتگر دی کی وار دات میں 20 افراد جا ں بحق اور متعد د زخمی ہو گئے دھما کے کے بعد سول ہسپتال اور بی ایم سی میں ایمر جنسی نافذ کر دی گئی دھما کے کی آواز دور دور تک سنی گئی وزیر اعظم عمر ان خان نے دھما کے کی مذمت کر تے ہوئے رپور ٹ طلب کر لی ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری، اپو زیشن لیڈر میا ں شہباز شر یف ،گورنر بلوچستان اما ن اللہ خان یا سین زئی،وزیراعلیٰ جام کما ل خان،وفاقی وزیر شہر یا ر آفر ید ی ،زبید ہ جلا ل اور معاون خصوصی وزیراعظم سردار یا ر محمد رند سمیت دیگر نے واقعے کی شد ید مذمت کی ہے۔
دوسری جا نب پاک افغان سر حد ی علاقے چمن میں بھی مو ٹر سا ئیکل پر نصب ریمو ٹ کنٹر ول بم پھٹنے سے ایک شخص جا ں بحق اور 10 زخمی ہو گئے ،جنہیں فوری طورپر ہسپتال پہنچا دیا گیا دھما کے سے قر یب کھڑ ی مو ٹر سا ئیکلو ں میں آگ بھڑ ک اٹھی جس پر فا ئر بر یگیڈ نے قا بو پا لیا۔
صوبائی دا ر الحکومت کوئٹہ اور چمن میں حالیہ دہشگر دی کے واقعات کی جتنی مذمت کی جا ئے کم ہے کیو نکہ اس میں بے گنا ہ لو گو ں کو جا ں ب©حق اور زخمی کیا گیا وہ اپنی مز دور ی کیلئے گھر و ں سے گئے تھے اور پھر ان کی لاشیں گھر و ں میں پہنچیں مزدور طبقہ کو نشا نہ بنا نے کے مذ کو رہ اقدام کی کوئی مہذ ب معا شر ہ اجا زت نہیں دیتا اسلام بھی کسی ایک انسان کی جا ن لینے کی اجا زت ہر گز نہیں دیتا کیو نکہ ایک انسا ن کا قتل پوری انسا نیت کے قتل کے متر اد ف ہے یہ با ت حقیقت پرمبنی ہے کہ دہشتگر دو ں کا کو ئی مذہب نہیں ہوتا۔
بلوچستان میں دہشتگر دی کی وار داتیں صوبے کے مفا د میں نہیں ہے کیو نکہ اس وقت صوبہ خطے کا اہم حصہ بن رہا ہے جو دشمن کو ہر گز ہضم نہیں ہو رہا یہ قو تیں صوبے کو تر قی کرتے نہیں دیکھنا چا ہتیں وہ امن وامان کی صورتحال خراب کرنے کے درپے ہیں اور اس میں بھی کوئی شک نہیں کہ اس میں بیرونی ہا تھ ملو ث ہو سکتا ہے صوبے میں سی پیک جیسا اہم منصوبہ شر وع ہو رہا ہے جس کے صوبے کی تر قی پر مثبت اثر ات مر تب ہو نگے لیکن دشمن کو یہ ایک آنکھ بھی نہیں بھا تا۔
اس میں کوئی شک نہیں کہ ہما ری سیکیو رٹی فو رسز نے صوبے میں دہشتگر دی کا قلع قمع کر دیا ہے اب بچے کھچے عنا صر ان مذ مو م سر گر میو ں میں حصہ لے رہے ہیں ان کا خاتمہ بھی جلد ہو جا ئے گا کیو نکہ ہما ری سیکیور ٹی فورسز اس سلسلے میں احسن اقدامات کر رہی ہیں جس کے لیے وہ کسی بھی قر بانی سے در یغ نہیں کر تیں ان کی ان قر بانیو ں کی بد ولت وہ دن دور نہیں جب بلوچستان بھر میں امن وامان کی صورتحال مکمل طور پر کنٹر ول میں آجا ئے گی اس طر ح بچے کھچے دہشگر دو ں کا بھی مکمل خاتمہ ہو جا ئے گا دہشتگر دی کے مکمل خا تمے کیلئے عوام کو بھی سیکیو رٹی فو رسز کے سا تھ مکمل تعا ون کر نا چا ہیئے اس سے دہشتگر دی کا خاتمہ ہونے میں خا طر خواہ مدد ملے گی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*