پاکستان نے نیوکلیئر سیکیورٹی کا موثرترین نظام تشکیل دیا ہے، ترجمان دفترخارجہ

اسلام آباد( اے این این ) ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹرمحمد فیصل نے کہا ہے کہ پاکستان نے نیوکلیئر سیکیورٹی کا موثرترین نظام تشکیل دیا، اور اپنے اداروں میں یہ استطاعت بھی پیدا کی ہے کہ وہ نیشنل سکیورٹی کے حوالے سے بین الاقوامی ٹریننگ پروگرامز منعقد کرسکیں۔دفترخارجہ کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ اسلام آباد میں عالمی جوہری توانائی ایجنسی اور پاکستان سینٹر فار ایکسیلینس نیوکلیئرسیکیورٹی کے اشتراک سے ورکشاپ کا انعقاد ہوا، جس میں بیلا روس، چین، مصر، انڈونیشیا، اردن، قازقستان، ملائیشیا، نائجیریا، رومانیہ، اسپین، ازبکستان اور ویتنام سمیت 18 ممالک کے نمائندگان نے شرکت کی۔ عالمی جوہری توانائی ایجنسی اور پاکستان سنٹر فار ایکسیلینس نیوکلیئر سکیورٹی نے ورکشاپ کی میزبانی کی۔پاکستان نیوکلیئر ریگولیٹری اتھارٹی کے سربراہ ظہیر ایوب بیگ نے ورکشاپ کا افتتاح کیا۔ تقریب میں مختلف ممالک کے سفارتخانوں کے حکام اور تھنک ٹینکس کے نمائندگان نے شرکت کی ۔ اختتامی تقریب میں چیئرمین پاکستان اٹامک انرجی کمیشن محمد نعیم شریک ہوئے۔ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کا کہنا تھا کہ ورکشاپ کا مقصد نیوکلیئر فزیکل پروڈکشن سسٹم کا جائزہ لینا تھا، ذمہ دار جوہری ریاست کی حیثیت سے پاکستان نے نیوکلیئر سیکیورٹی کا مثرترین نظام تشکیل دیا ہے، پاکستان نے اپنے اداروں میں یہ استطاعت بھی پیدا کی ہے کہ وہ قومی سلامتی کے حوالے سے بین الاقوامی تربیتی پروگرامز کا بھی انعقاد کر سکے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*