بلوچستانی عوام کے اعتماد کو ٹھیس پہنچائیں گے نہ اصولوں پر سودا بازی کریںگے،سردار اختر مینگل

کوئٹہ (این این آئی) بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ سردار اختر جان مینگل نے کہا ہے کہ بلوچستانی عوام کے اعتماد کو ٹھیس پہنچائیں گے نہ اصولوں پر سودا بازی کریں گے ہماری سیاست کا محور و مقصد عوام کے اجتماعی قومی مفادات کا حصول ہے یہی وجہ ہے کہ پی ٹی آئی قیادت کے سامنے چھ نکات رکھے ان میں سرفہرست لاپتہ افراد کی بازیابی ‘ افغان مہاجرین کی واپسی بھی شامل ہے مرکزی حکومت کو ایک سال کا وقت دیا تھا اب چار ماہ باقی ہیں حالیہ ملاقاتوں میں وفاقی حکومت کو کہا ہے کہ وہ ہمارے مطالبات پر عملدرآمد کیلئے سنجیدگی کا مظاہرہ کرے بی این پی سیاسی قومی جمہوری جماعت ہے جو اپنے عوام اور کارکنوں کے سامنے جوابدہ ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے کوئٹہ پہنچنے پر ایم پی ہاسٹل کوئٹہ میں پارٹی کارکنوں کے منعقدہ اجلاس میں سوالات کے جواب دیتے ہوئے کیا اس موقع پر پارٹی کے مرکزی سینئر نائب صدر ملک عبدالولی کاکڑ ‘ مرکزی ہیومن رائٹس سیکرٹری موسیٰ بلوچ ‘ بی ایس او کے مرکزی چیئرمین نذیر بلوچ ‘ مرکزی کمیٹی کے اراکین ساجد ترین ایڈووکیٹ ‘ ایم پی اے اختر حسین لانگو ‘ غلام نبی مری ‘ چیئرمین جاوید بلوچ ‘ ضلعی صدر رکن صوبائی اسمبلی احمد نواز بلوچ ‘ ایم پی اے حمل کلمتی ‘ ڈاکٹر عبدالقدوس بلوچ ‘ میر جمال لانگو ‘ضلعی جنرل سیکرٹری آغا خالد شاہ دلسوز ‘ نائب صدر طاہر شاہوانی ‘ جوائنٹ سیکرٹری حاجی عبدالغفور سرپرہ ‘ انفارمیشن سیکرٹری یونس بلوچ ‘ فنانس سیکرٹری حاجی فاروق شاہوانی ‘ لیبر سیکرٹری ڈاکٹر علی احمد قمبرانی ‘بی ایس او کے مرکزی کمیٹی کے ممبر عتیق بلوچ سمیت پارٹی اور بی ایس او کے کے دیگر عہدیداران بھی موجود تھے اس موقع پر پارٹی قائد سردار اختر جان مینگل کے خطاب کرتے کہا کہ ہم سیاسی پروگرام کے تحت عوام کے پاس گئے عوام سے جو وعدے ہم نے کئے کہ بلوچستان کے معاملات کو حل کرنے کیلئے ہر فورم پر موثر آواز بلند کریں گے جس میں لاپتہ افراد کی بازیابی ‘ افغان مہاجرین کی واپسی ‘ گوادر میں ڈیمو گرافک تبدیلی روکنے کیلئے قانون سازی ‘ ساحل وسائل پر واک و اختیار کے حصول سمیت ترقی و خوشحال اور بے روزگاری کے خاتمے کیلئے جدوجہد کریں گے ہر فورم پر اپنے صوبے کے مفادات کو اولیت دیں گے یہی وجہ ہے کہ پارٹی نے اقتدار ‘ مراعات ‘ وزارتوں کو رد کر کے بنیادی مسائل کے حل کو ترجیح دی جس کے حل کرنے کیلئے ہم عوام کے پاس گئے تھے عوام کو یقین دلاتے ہیں کہ کسی بھی صورت میں اعتماد کو ٹھیس نہیں پہنچائیں گے ان کی توقعات پر پورا اترنے کیلئے ہر ممکن کوشش کریں گے کیونکہ ہمیں بلوچ قوم اور بلوچستانی عوام کے قومی اجتماعی مفادات عزیز ہیں انہوں نے کہا کہ بی این پی مرکز میں آزاد اور صوبے میں اپوزیشن میں ہے جس انداز میں عوامی مسائل کو اجاگر کرنے کیلئے جدوجہدمیں مصروف عمل ہیں اس سے پہلے اس انداز میں بلوچستان کے مسائل کو اجاگر نہیں کیا گیا پارٹی کے کارکن عہدیداران اور ووٹرز کو یہ فخر حاصل ہے کہ بلوچستان کے اہم بنیادی مسائل کو صحیح معنوں میں اجاگر کیا قومی مفادات کو ترجیح دے کر اپنی سیاسی جمہوری جدوجہد کو آگے بڑھانے کیلئے پارٹی کارکنوں پر بڑی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ گھمبیر سیاسی صورتحال پر نظریں مرکوز کر کے عوام کو صحیح حقائق سے آگاہ کر کے سیاسی جمہوری جدوجہد کی طرف راغب کریں انہوں نے کہا کہ طلباءکے سیاسی سرگرمیوں پر پابندی پہلا حربہ نہیں ضیاءالحق کے دور حکومت میں طلباءکی سیاسی سرگرمیوں پرقدغن لگانے کی کوشش کی گئی اور ہر آمر حکمرانوں نے طلباءکی بڑھتی ہوئی سیاسی قومی جمہوری جدوجہد سے خائف ہو کر منفی ہتھکنڈے اپنائے اس کا بنیادی مقصد ملک و صوبے میں قومی وطن دوستی اور حقیقی جمہوری فکر و فلسفہ کو کمزور کرنا ہے لیکن ایسے ہتھکنڈوں کو ہمیشہ سیاسی سوچ رکھنے والے باشعور کارکنان نے پرواہ کئے گئے بغیر تمام ناانصافیوں کا مقابلہ کرتے ہوئے اپنے قومی اور وطنی ذمہ داریوں کو نہایت ہی بہتر انداز میں آگے بڑھایا انہوں نے کہا کہ موجودہ گھمبیر سیاسی صورتحال سے عوام کو نکالنے کیلئے بی این پی کے کارکنوں کو دن رات ایک کر کے جدوجہد کرنی ہوگی آنے والے چیلنجز کا مقابلہ کرنے کیلئے صف بندی کرنی ہوگی تاکہ سرزمین اور قوم کو سنگین مشکل حالات سے نکالا جا سکے ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*