پی ایس ایل کا پودا درخت بن کرپھل دینے لگا

کراچی(سپورٹس نیوز) پی ایس ایل کا پودا درخت بن کرپھل دینے لگا جب کہ ایونٹ کی تاریخ میں پہلی بار کم از کم تین فرنچائزز کو مالی طور پر فائدہ ہوگا۔پی ایس ایل سیزن فور کی فاتح ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز سمیت چند دیگر فرنچائزز اس بار مالی طور پر فائدے میں رہیں گی، اس کی بڑی وجہ ٹائٹل اسپانسر شپ اور نشریاتی حقوق کی ڈیل بنی، پی سی بی نے تین سال کیلئے 36ملین ڈالر کا براڈکاسٹنگ کنٹریکٹ کیا، ٹائٹل اسپانسر شپ تین سال کیلئے 14.30ملین ڈالر میں فروخت ہوئی۔ذرائع نے بتایا کہ رواں برس تمام فرنچائزز کو سینٹرل انکم پول سے22لاکھ ڈالر سے زائد رقم ادا کی جائے گی،اگر اس میں میچ ٹکٹس و دیگر آمدنی بھی شامل کر لی جائے تو یہ رقم 25لاکھ ڈالر تک پہنچ سکتی ہے،رواں برس پاکستان میں 8میچز سے بھاری گیٹ منی بھی حاصل ہوئی، فرنچائزز کو اسپانسر شپ اور مرچنڈائزنگ سے بھی رقم ملے گی۔ٹائٹل جیتنے والی ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے فرنچائز فیس کی مد میں پی سی بی کو1.1ملین ڈالر دیے، اگر2017کے پیش کردہ اکاونٹس کا جائزہ لیا جائے تو سینٹرل پول سے10کروڑ56لاکھ17ہزار444 روپے اور اسپانسر شپ سے 9کروڑ56 لاکھ 47 ہزار ایک روپے کی آمدنی سمیت فرنچائز کو مجموعی رقم20کروڑ 17 لاکھ 64 ہزار445روپے حاصل ہوئے تھے، مگر اخراجات منہا کرنے کے بعد کوئٹہ گلیڈی ایٹرزکو دوسرے سال 6کروڑ 35 لاکھ 18 ہزار476روپے کا نیٹ خسارہ ہوا تھا، اب چونکہ صرف سینٹرل پول سے ہی تقریبا دگنی رقم مل رہی ہے اور اسپانسر شپ کی ڈیل بھی پہلے سے اچھی ہوئی ، اس لیے فرنچائز کو مالی فائدہ ہو گا، اسے ون بونس کے5لاکھ ڈالرز بھی ملیں گے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*