حکومت نے کم وقت میں پالیسی میٹرز میں اہم پیش رفت کی ہے،میرظہور بلیدی

mir zahoor buledi

تربت(خ ن) صوبائی وزیر اطلاعات و ہائر ایجوکیشن میرظہور احمد بلیدی نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت مضبوط ہے اور بہتراندازمیں عوامی خدمت اور صوبہ کی ترقی وخوشحالی کیلئے مصروف عمل ہے ،اپوزیشن سیاسی شوشہ بازی کرنا چاہتی ہے تو اسے اجازت ہے ورنہ اپوزیشن کو حکومت کی شاندار کارکردگی کا اچھی طرح علم ہے،اب تک پی ایس ڈی پی کے 27ارب روپے خرچ کئے جاچکے ہیں ،جون تک 30ارب روپے خرچ ہوںگے ،صوبائی حکومت کی مختصر مدت کی کارکردگی انتہائی خوش آئند ہے حکومت نے کم وقت میں پالیسی میٹرز میں اہم پیش رفت کی ہے ،مائینز اینڈ منرل پالیسی اپ ڈیٹ کر کے بڑی کامیابی حاصل کی جبکہ بلوچستان پبلک سروس کمیشن ایکٹ کا ترمیمی بل صوبائی اسمبلی میں پیش کیا،ان خیالات کااظہار انہوں نے اپنی رہائش گاہ پر میڈیا نمائندوں سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کیا، صوبائی وزیر اطلاعات وہائر ایجوکیشن میر ظہور احمدبلیدی نے کہاکہ اپوزیشن کے پاس سوائے چیخ وپکار اور شعبدہ بازی کے اورکچھ بھی نہیں ہے اپوزیشن جتنا چاہے شور مچائے حکومت اپنے طریقہ کار کے مطابق ترقیاتی و غیر ترقیاتی شعبوں پر احسن طریقے سے عمل پیرا ہے پالیسی میٹرز میںپہلی بار اہم پیش رفت کے علاوہ حکومت نے کئی اہم پروجیکٹ پر کام کیا سبک زئی اور مانگی ڈیم پر کام کے علاوہ بسول ڈیم پر صوبائی حکومت نے 50کروڑ روپے خرچ کرنے کا فیصلہ کیاہے اس کے علاوہ میرانی ڈیم کمانڈ ایریا پرگزشتہ دور سے جاری 56کروڑ روپے کے منصوبے پر اب تک 25فیصد بھی کام نہیں ہواہے موجودہ حکومت اسے جلد مکمل کرنے کیلئے اقدامات اٹھارہی ہے اسی طرح صوبائی حکومت نے کچھی کینال سمیت زراعت کے فروغ کے دیگرمنصوبوں پر بھی کام کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ صوبائی حکومت نئے بلڈوزروں کی خریداری کررہی ہے انہوں نے کہاکہ ہماری حکومت دعوﺅں کے بجائے عملی طورپر عوام کو سہولت دینے اور کام کرنے پر یقین رکھتی ہے سابق ادوار میں حکومتوں نے شوشہ بازی کے سوا کچھ نہیں کیا جس کی وجہ سے ان کے حصے کے کام بھی ہمیں کرنے پڑ رہے ہیںانہوں نے کہاکہ اپوزیشن کا کام محض چیخنا ہے ان سے حکومت کے ترقیاتی کام اور اہم پیش رفت ہضم نہیں ہورہے ہیں اس لیئے سیاسی شعبدہ بازی کا سہارا لے کر واویلا مچارہی ہے، صوبائی حکومت مضبوط ہے اوریکسوئی کے ساتھ کام کررہی ہے ،انہوں نے کہاکہ تربت میں ڈینگی وائرس کے کیسز سامنے آنے کے فوراً بعد صوبائی حکومت نے ضلعی انتظامیہ کو متحرک کردیا تاکہ اس سے مزید جانی نقصان نہ ہواس پر ہم نے کامیابی بھی حاصل کرلی اور ابتدائی نقصانات کے علاوہ پھر کوئی جانی نقصان نہ ہوا ،اس سلسلے میں وزیراعلیٰ بلوچستان نے خصوصی ٹیمیں تشکیل دے کر تربت بھیج دیں اور وہ خود بھی یہاں آئے جبکہ ایک ہفتے سے میں خود تربت میں بیٹھ کر ڈینگی کی صورتحال کو مانیٹر کررہا ہوں ہماری کوششوں سے اس وباءپربروقت قابو پانے اور جانی نقصانات سے بچاﺅ ممکن ہوسکا ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*