آرمی چیف کی 11دہشتگردوں کی سزائے موت کی توثیق

راولپنڈی(آئی این پی ) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 11 دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کردی، دہشت گرد سیکیورٹی فورسز پر حملوں اور تخریب کاری میں ملوث ہیں،ہشت گرد مجموعی طور پر 49 سویلین اور 20 مسلح فورسز کے اہلکاروں سمیت 69 افراد کے قتل میں ملوث تھے، دہشت گردوں نے 148 افراد کو زخمی بھی کیا تھا، ان کے قبضے سے دھمکا خیز مواد، اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد ہوا ، انہیں خصوصی فوجی عدالتوں سے سزائیں دی گئی تھیں،4 مجرمان کو قید کی سزا بھی دی گئی تھی۔ جمعہ کو پاک فوج کے شعبہ برائے تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث 11 دہشت گردوں کی سزائے موت میں توثیق کر دی۔آئی ایس پی آر کے مطابق یہ دہشت گرد مسلح افواج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر حملے، تعلیمی اداروں کو تباہ اور معصوم شہریوں کو قتل کرنے سمیت دہشت گردی کی کئی وارداتوں میں ملوث تھے۔، دہشت گردوں نے 69 اہلکاروں اور شہریوں کو شہید کیا جبکہ دہشت گردوں کی کارروائیوں میں 148 اہلکاروں اور شہریوں کو زخمی بھی ہوئے۔آرمی چیف کی جانب سے جن دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کی گئی ان میں عین اللہ ولد بشر خان، نائیک ولی ولد گل میر خان، فضل منان ولد عبدالخانان، رحمت زادہ ولد سیف الرحمن، زید محمد ولد یوسف حسین، نعمت اللہ ولد عطا اللہ، مسین زادہ ولد نور فارسٹ، محمد رحمن ولد عبدالرحیم، عظمت اللہ ولد سلیمان، محمد رقیم ولد فضل جاناں، اکرام خان ولد خان زادہ شامل ہیں۔۔آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیموں سے ہے۔ جن کے قبضے سے اسلحہ اور دھماکہ خیز مواد بھی برآمد ہوا۔دہشت گردوں نے فوجی عدالتوں میں جرائم کا اعتراف کیا اور جرم ثابت ہونے پر سزائے موت کا حکم دیا گیا تھا۔ترجمان پاک فوج نے کہا ہے کہ چار دیگر دہشت گردوں کومختلف سزائیں بھی سنائی گئی ہیں

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*