تازہ ترین

پاکستان کی اسرائیلی جارحیت اور ہندوستان میں مسجد شہید کر نے کی مذمت

اسلام آباد (این این آئی) پاکستان نے ایک بار پھر اسرائیلی جارحیت اور بھارتی ریاست اتر پردیش میں مسجد شہید کر نے کے واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ اقوام متحدہ اپنے چارٹر کے مطابق فلسطین میں مظالم بند کرائے،بھارت اقلیتوں کے ثقافتی ورثہ کی حفاطت یقین بنائے،بھارت جان بوجھ کے کشمیری یوتھ کا ماورائے عدالت قتل، ٹارچر اور جبری گمشدگی کررہا ہے،یو این ہائی کمیشنر فار ہیومن رائٹس کی رپورٹس پر عملدرآمد ہونا چاہیے، افغان رہنماﺅں کے بیانات پر افسوس ہوا ہے ،تمام دوطرفہ ایشوز طے شدہ میکنزم کے تحت حل ہونا چاہئیں،پاکستان اور سعودی عرب کے کئی شعبوں میں تعلقات ہیں،تیل کی موخرادائیگیوں پر خریداری کا معاملہ متعلقہ وزارت سے پوچھا جائے۔ہفتہ وار بریفنگ کے دور ان ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے کہاکہ اسرائیلی حملوں کی شدید مذمت کرتے ہیں،اسرائیلی حملوں میں معصوم فلسطینی بشمول بچے اور خواتین جاں بحق ہوئے۔ انہوںنے کہاکہ وزیر خارجہ نے اس حوالے سے عالمی سطح پر رابطے کئے۔ وزیر خارجہ اسی حوالے سے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی اجلاس میں شرکت کیلئے نیویارک کے دورے پر ہیں،وزیر خارجہ نے اس حوالے سے ترکی کا بھی دورہ کیا ہے۔انہوںنے کہاکہ پاکستان نے اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی اوپن میٹنگ میں بھی شرکت کی اور اسرائیلی بمباری کی مذمت کی،اقوام متحدہ اپنے چارٹر کے مطابق فلسطین میں مظالم بند کرائے۔ انہوںنے کہاکہ وزیر اعظم عمران خان نے آج چینی ہم منصب سے فون پر گفتگو کی،وزیر اعظم نے چین پاکستان دوستی کے ستر سال مکمل ہونے پر چینی ہم منصب کو مبارک باد دی۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان اتر پردیش بھارت میں غریب نواز مسجد شہید کرنے کی سخت مذمت کرتا ہے،غریب نواز مسجد 100 برس سے زائد پرانی تاریخی مسجد تھی،اس شرمناک عمل سے بابری مسجد کی شہادت کی یاد تازہ ہوئی۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان بھارت پر اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ کےلئے دباﺅ ڈالتا ہے،بھارت اقلیتوں کے ثقافتی ورثہ کی حفاطت یقین بنائے۔ انہوںنے کہاکہ اشرف صحرائی کی وفات پر افسوس ہے،اشرف صحرائی کو بھارت قید میں کورونا ہوا،متعدد حریت رہنما متعدد بھارتی جیلون اور نامعلوم مقامات پر قید ہیں۔ترجمان دفترخارجہ نے کہاکہ اشرف صحرائی کی بھارتی حراست میں وفات پر تشویش کا اظہار کرتے ہیں،بھارت کو چاہئے کہ کشمیری لیڈروں کی سیفٹی کا خیال رکھے جو اس کی تحویل میں ہیں،بھارت میں کورونا کی بگڑتی صورتحال کے پیش نظر ان کشمیری رہنماﺅں کی صحت کا خیال رکھنا بھارتی ذمہ داری ہے،کشمیریوں کی جعلی مقابلوں میں ماورائے عدالت قتل کے واقعات کی مذمت کرتے ہیں،بھارت جان بوجھ کے کشمیری یوتھ کا ماورائے عدالت قتل، ٹارچر اور جبری گمشدگی کررہا ہے،یو این ہائی کمیشنر فار ہیومن رائٹس کی رپورٹس پر عملدرآمد ہونا چاہیے۔ترجمان دفترخارجہ نے کہاکہ افغان رہنماو¿ں کے پاکستان مخالف بیانات پر افسوس ہوا،افغان قیادت کی طرف سے بے بنیاد الزامات پر سخت احتجاج کیا گیا،افغان سفیر کو اس حوالے سے احتجاجی مراسلہ دیا گیا،تمام دوطرفہ ایشوز طے شدہ میکنزم کے تحت حل ہونا چاہئیں۔ رجمان نے کہاکہ پاکستان کے دستور میں اقلیتوں کو مکمل حقوق حاصل ہیں،پارلیمنٹ میں اقلیتوں کےلئے سیٹیں مختص ہیں،پاکستان میں قانونی، آئینی، سماجی، اقتصادی اور سیاسی اقدامات کے ذریعہ اقلیتوں کے حقوق کو یقینی بنایا جاتا ہے،وزارت خارجہ میں پوسٹنگس کے تمام فیصلے میرٹ پر کئے جاتے ہیں،ماضی میں بھی اس پوسٹنگ پالیسی گائیڈلائنز پر عمل کیا گیا اور آئندہ بھی کیا جائے گا۔ انہوںنے کہاکہ بارسلونہ میں انضباطی بنیاد پر ایک اہلکار کو ملازمت سے برخواست کیا گیا،فلسطین میں صحافیوں پر اسرائیلی حملوں کی مذمت کرتے ہیں۔ بھارت کے ساتھ بامعنی اور نتیجہ خیز مذاکرات کے حامی ہیں مگر ہمارا بنیادی نقطہ مسئلہ کشمیر کا حل ہے۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان اور سعودی عرب کے کئی شعبوں میں تعلقات ہیں،تیل کی موخرادائیگیوں پر خریداری کا معاملہ متعلقہ وزارت سے پوچھا جائے۔ انہوںنے کہا کہ دفتر خارجہ پاکستان کے دفاع کی اولین صف ہے،پاکستان کی وزارت خارجہ کا شروع سے ایک خوشنما اور روشن کردار ہے ،دنیا بھر میں پاکستانی برادری کی خدمات کےلئے وزیر اعظم نے احکامات جاری کر رکھے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ سیکرٹری خارجہ کی قیادت میں عوامی شکایات کا جائزہ لینے کے لیے ایک ٹاسک فورس تشکیل دی جا رہی ہے۔ انہوںنے کہاکہ ٹوکیو میں پاکستانی سفارتخانہ میں آگ بھڑک اٹھی، مقامی فائر فائٹرز کو فوری بلایا گیا جنہوں نے آگ بھجائی ،سفارتخانہ کے کسی اہلکار یا پراپرٹی کو کوئی بڑا نقصان نہیں پہنچا، واقعہ کی وجوہات جاننے کے لئے مقامی فائر فائٹر حکام کے ساتھ ملکر تحقیقات کی جارہی ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*