تازہ ترین

وفاقی سرکاری ملازمین کا تنخواہوں میں اضافے کے معاملے پر شدید احتجاج

اسلام آباد (آئی این پی)وفاقی سرکاری ملازمین کی طرف سے تنخواہوں میں اضافے کے معاملے پر شدید احتجاج ،پولیس کا ملازمین کے خلاف کریک ڈاﺅن اور گرفتاریاں،مظاہرین پر لاٹھی چارج اور آنسو گیس کی شیلنگ سمیت ربڑ کی گولیاں بھی برسائی گئیں، ملازمین کی طرف سے پولیس پر جوابی پتھراﺅ کیا گیا،جس سے کئی ملازمین اور پولیس اہلکار معمولی زخمی ہوئے، ریڈ زون میدان جنگ بنا رہا،سینکڑوں ملازمین کو گرفتار کر کے مختلف تھانوں میں منتقل کر دیا گیا ہے، وفاقی سیکرٹریوں سمیت سینکڑوں سینئر افسران دفاتر نہ پہنچ سکے، سرکاری امور ٹھپ رہے،کیبنٹ بلاک کا مرکزی داخلی دروازہ توڑ دیا گیا، مظاہرین نے سینیٹر شبلی فراز کو دفتر جاتے ہوئے روک لیا۔تفصیلات کے مطابق سرکاری ملازمین جو گزشتہ کئی عرصہ سے تنخواہوں میں اضافے سے متعلق احتجاج کر رہے تھے،بدھ کو ملازمین کے احتجاج میں صوبوں سے آنے والے ملازمین نے شرکت کرنا تھی اور اعلان کیا گیا تھا کہ سرکاری امور ٹھپ کرتے ہوئے بھرپور احتجاج کیا جائے گا،دوسری جانب پولیس نے گزشتہ رات گئے ملازمین تنظیموں کے عہدیداران کے گھروں پر چھاپے مار کر گرفتاریوں کا عمل شروع کیا،جس میں سی ڈی اے مزدور یونین کے مرکزی عہدیداروں کو گرفتار کرلیا گیا جبکہ پاک سیکرٹریٹ میں احتجاج کرنے والے ملازمین کے خلاف علی الصبح کارروائی کرتے ہوئے گرفتاریاں شروع کیں، چند سو ملازمین پاک سیکرٹریٹ کے باہر شاہراہ دستور پر سیکرٹریٹ چوک کے مقام پر احتجاج کرتے رہے اور ان مظاہرین نے پاک سیکرٹریٹ کے تمام بلاکس کے مرکزی دروازے بند کر دیئے،جس پر سرکاری ملازمین کی بڑی تعداد پاک سیکرٹریٹ کے اندر محصور ہو کر رہ گئی، ملازمین کی طرف سے احتجاج میں شدت لاتے ہی پولیس نے دھاوا بول دیااور سینکڑوں ملازمین کو گرفتار کرلیا، اس دوران مظاہرین کو منتشر کرنے کےلئے آنسو گیس کی شیلنگ اور ربڑ کی گولیوں سمیت ہوائی فائرنگ بھی کی گئی جس سے کچھ دیر کے لئے مظاہرین منتشر ہوئے لیکن دوبارہ مظاہرین سڑکوں پر آ گئے اور نعرے بازی شروع کر دی، اس دوران آنسو گیس کی شیلنگ کے جواب میں مظاہرین پولیس پر پتھراﺅ بھی کرتے رہے، چار گھنٹے سے زائد وقت تک شاہراہ دستور میدان جنگ بنی رہی،سینئر پولیس افسران بھی موقع پر موجود رہے، مظاہرین نے کیبنٹ بلاک کا مرکزی دروازہ تھوڑ دیا جبکہ وفاقی وزیر سینیٹر شبلی فراز کو دفتر جاتے ہوئے روک لیا گیا جس پر سینیٹر شبلی فراز نے ملازمین کو یقین دہانی کرائی کہ وہ ان کے مطالبات سے متعلق وفاقی حکومت سے بات کریں گے، پولیس کی شیلنگ سے کئی ملازمین زخمی بھی ہوئے جبکہ مظاہرین کے پتھراﺅ سے بھی کچھ پولیس اہلکار معمولی زخمی ہوئے ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*