تازہ ترین

وفاقی بجٹ‘ 2020-21کےلئے مجموعی طور پر1324ارب کاسالانہ ترقیاتی بجٹ پیش

اسلام آباد(آئی این پی) وفاقی حکومت نے مالی سال 2020-21کےلئے مجموعی طور پر1324ارب کاسالانہ ترقیاتی بجٹ(پی ایس ڈی پی)پیش کر دیا ،جس میں650 ارب وفاق اور674ارب صوبوں کےلئے رکھے گئے ہیں،سالانہ ترقیاتی پروگرام میں کرونا وائرس اور دیگرقدرتی آفات سے نمٹنے کیلئے70 ارب روپے رکھے گئے ہیں ،وفاقی سالانہ ترقیاتی پروگرام میں وفاقی تعلیم،دفاعی پیداوار،خزانہ ڈویژن،خارجہ امور ،اطلاعات و نشریات،صنعت و پیداوار،اٹامک انرجی کمیشن ، این ایچ اے سمیت25ڈویژنز کے ترقیاتی بجٹ میں گزشتہ سال کی نسبت کمی کی گئی ہے جبکہ ہاﺅسنگ اینڈ ورکس ،داخلہ،وزارت صحت سمیت 14ڈویژنز کا ترقیاتی بجٹ گزشتہ سال کی نسبت بڑھا دیا گیا۔بجٹ دستاویزات کے مطابق وفاقی حکومت نے مالی سال 2020-21کےلئے مجموعی طور پر1324ارب کے سالانہ ترقیاتی بجٹ کی تجاویز دی ہیں،جس میں650 ارب وفاقی سالانہ ترقیاتی بجٹ جبکہ674ارب صوبوں کےلئے رکھے گئے ہیں،بجٹ دستاویزات کے مطابق مالی سال 2020-21میں ایوی ایشن ڈویژن کےلئے1320.879ملین روپے ،بورڈ آف انویسٹمنٹ کےلئے80ملین،کیبنٹ ڈویژن کےلئے47802.175ملین روپے، موسمیاتی تبدیلی ڈویژن کےلئے5ہزار ملین، کامرس ڈویژن کےلئے 103.5ملین روپے، وزارت مواصلات (این ایچ اے کے علاوہ) کےلئے 254.753ملین، دفاع ڈویژن کےلئے660.116ملین، دفاعی پیداوار ڈویژن کےلئے1579.140ملین روپے،اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کےلئے282.914ملین روپے رکھے گئے ہیں۔بجٹ دستاویزات کے مطابق وزارت تعلیم کا ترقیاتی بجٹ گزشتہ سال کے4741.138سے کم کر کے مالی سال 2020-21کےلئے4526.096ملین رکھا گیا ہے،اسی طرح خزانہ ڈویژن کےلئے ترقیاتی بجٹ کم کر کے 66666.571ملین رکھا گیا ہے، خارجہ ڈویژن کےلئے ترقیاتی بجٹ29.774ملین سے کم کر کے10.343ملین رکھا گیا ہے۔بجٹ دستاویزات کے مطابق ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے بجٹ میں معمولی اضافہ کیا گیا ہے، گزشتہ سال ایچ ای سی کا ترقیاتی بجٹ 29196.882ملین سے بڑھا کر آئندہ مالی سال کےلئے 29470ملین رکھا گیا ہے۔بجٹ دستاویزات کے مطابق ہاﺅسنگ ڈویژن کےلئے ترقیاتی بجٹ گزشتہ سال کی نسبت بڑھا کر 8736.903ملین رکھا گیا ہے،اسی طرح انسانی حقوق ڈویژن کےلئے 256ملین، صنعت و پیداوار ڈویژن کےلئے 800ملین، وزارت اطلاعات و نشریات کا بجٹ 440.510سے کم کر کے 360.918ملین رکھا گیا ہے۔انفارمیشن و ٹیکنالوجی ڈویژن کےلئے 6672.984ملین، بین الصوبائی رابطہ ڈویژن کےلئے 929.492ملین،داخلہ ڈویژن کےلئے 14758.436ملین، کشمیر گلگت بلتستان ڈویژن کےلئے 52424.602ملین،قانون و انصاف ڈویژن کےلئے 991.424ملین، میری ٹائم افیئر ڈویژن کےلئے 2683.314 ملین، انسداد منشیات ڈویژن کےلئے 53.897، نیشنل فوڈ سیکیورٹی اینڈ ریسرچ کےلئے 12ہزار ملین سالانہ ترقیاتی بجٹ رکھا گیا ہے۔ بجٹ دستاویزات کے مطابق مالی سال 2020-21کے پی ایس ڈی پی میں وزارت صحت کا بجٹ بڑھایا گیا ہے،گزشتہ مالی سال میں وزارت صحت کا بجٹ 13376.558ملین روپے رکھا گیا تھا جس کو بڑھا کر آئندہ مالی سال کےلئے 14508.180ملین روپے،اسی طرح قومی ورثہ ڈویژن کےلئے 194.740ملین ، پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کےلئے 23297.437ملین، پاکستان نیوکلیئر ریگولیٹری اتھارٹی کےلئے 350ملین،پٹرولیم ڈویژن کےلئے 1786.160ملین،پلاننگ ڈویلپمنٹ ڈویژن کےلئے 3545.103ملین، پاورٹی ایلیویشن ڈویژن کےلئے 135ملین ،ریلوے ڈویژن کےلئے 24ہزار ملین، مذہبی امور ڈویژن کےلئے 53.950ملین،ریونیو ڈویژن کےلئے 1697.068ملین،سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ڈویژن کےلئے 4458.070ملین، سپارکو کےلئے 4975ملین،واٹر ریسورسز ڈویژن کےلئے 21250ملین رکھا گیا ہے۔ گزشتہ سال واٹر ریسورسز ڈویژن کےلئے 85727.359ملین رکھا گیا تھا۔مالی سال 2020-21کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں ٹیکسٹائل انڈسٹری کےلئے کوئی فنڈز مختص نہیں کئے گئے، مالی سال 2020-21کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں نیشنل ہائی وے اتھارٹی( این ایچ اے)کا ترقیاتی بجٹ بھی کم کر دیا گیا ہے، مالی سال 2019-20میں این ایچ اے کےلئے 154966.835ملین روپے رکھے گئے تھے جنہیں کم کر کے آئندہ مالی سال کےلئے 118674.885ملین رکھا گیا ہے، اسی طرح این ٹی ڈی سی اور پیپکو کےلئے 39649.980ملین، ایرا کےلئے 3ہزار ملین رکھے گئے ہیں۔مالی سال 2020-21کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں کرونا وائرس اور دیگرقدرتی آفات سے نمٹنے کیلئے70 ارب روپے رکھے گئے ہیں۔مالی سال 2020-21کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں صوبوں کےلئے 674000ملین روپے صوبوں کےلئے رکھے گئے ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*