وزیر اعظم کا پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتیں بر قر ار رکھنے کا حکم

وزیر اعظم عمر ان خان نے او گر ا کی سفا ر ش مستر د کر تے ہوئے پٹرولیم مصنو عا ت کی قیمتو ں میں اضا فہ نہ کرنے کی ہد ایت جا ری کر دی وزیر اعظم کے معا ون خصو صی شہبا ز گل نے سما جی رابطے کی ویب سا ئٹ ٹو یٹر پر پٹر ولیم مصنوعا ت کی قیمتو ں میں اضا فہ نہ کرنے کے فیصلے سے آگا ہ کیا انہوں نے وا ضح کیا کہ پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتو ں میں 5 سے 10 روپے اضا فے کی او گر ا نے سفا ر ش کی تھی جسے وزیر اعظم عمر ان خان نے مستر د کر دیا اس طرح پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتیں بر قر ار رکھ کرحکومت 4.8 ار ب روپے کا بو جھ عو ام کی خا طر بر داشت کر رہی ہے۔
وزیر اعظم عمر ان خان کاپٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتو ں میں اضا فہ نہ کرنا بلا شبہ قا بل تعر یف اقد ام ہے کیو نکہ اس وقت پہلے سے پٹر ولیم مصنوعا ت مہنگی ہونے کی وجہ سے مہنگائی عر وج پر ہے کیونکہ یہ امر حقیقت پر مبنی ہے کہ پٹر ولیم ایک ایسی بنیا دی شے ہے جس کا مہنگاہو نے سے مہنگائی میں اضا فہ ہو جا تا ہے کیو نکہ ٹر ا نسپو ر ٹر یشن کے کر ایوں میں اضا فے سے اشیا ءکی قیمتیں خو د بخو د بڑھ جا تی ہیں وزیر اعظم عمر ان خان نے اس مر تبہ اس سلسلے میں عو ام کو ریلیف فر اہم کیا ہے جو کہ اچھی با ت ہے لیکن یہاں وزیر اعظم عمر ان خان کی تو جہ اس جا نب منبد ول کرنا ضروری ہے کہ انہوں نے پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتو ں میں اضا فہ نہ کر کے عو ام کو جو ریلیف دیا ہے اس میں مز ید تو سیع دینے کی ضرورت ہے کیو نکہ اس وقت ما ہ رمضان میں اشیا ءخو ر د و نو ش کی کا فی اشیا ءاب بھی مہنگی ہیں جو تا جر اپنی مر ضی سے فر و خت کر رہے ہیں کو کنگ آئل اور گھی کی قیمتو ں میں روزانہ کی بنیا د پر مسلسل اضا فہ ہو رہا ہے اس کے سا تھ سا تھ چینی بھی 100 روپے کلو میں فر و خت ہو رہی ہے دوسر ی جا نب چکن اور گو شت فر و خت کرنے والے بھی آزا د ہیں وہ عو ام کو اس مقدس ما ہ میں دو نو ں ہا تھو ں سے بے در دی کے سا تھ لو ٹ رہے ہیں جو کہ ایک بہت بڑ ا لمحہ فکر یہ ہے کیو نکہ اس پر کوئی چیک اینڈ بیلنس کا نظام نہیں ہے ۔
اس لیے یہا ں ضرورت اس امر کی ہے کہ وزیر اعظم عمر ان خان کو اس سلسلے میں متعلقہ ادا رو ں کو احسن اقد اما ت کرنے کی ہد ایا ت دینی چا ہئیں جو کہ اس وقت اپنے فر ائض سر انجا م نہیں دے رہے انہوں نے تا جر و ں کو کھلی چھٹی دے رکھی ہے کہ وہ عو ام کو جس طرح چا ہیں لو ٹیں ہم سمجھتے ہیں کہ ایسے اقد اما ت حکومتی رٹ کو چیلنج کرنے کے متر ادف ہے اس لیے حکومت اور انتظامیہ کو اپنی رٹ بر قر ار رکھنے کے لیے احسن اقد اما ت کر نے چاہئیں کیو نکہ افسو س کی با ت یہ ہے مو جو دہ حکومت کے دو ر میں ملک میں تا ریخی مہنگائی ہوئی ہے جس کو روکنے میں حکومت اور متعلقہ ادا رے بے بس نظر آ تے ہیں اور اس وجہ سے عو ام میں شد ید احسا س محرومی پید ا ہو رہا ہے ان کے لیے گھر کا بجٹ بنا نا مشکل تر ہو رہا ہے جس سے ان کے گھر و ں میں فا قے پڑ نے کا خد شہ ہے اس لیے عو ام کو ریلیف دینے کی مز ید ضرورت ہے جس کا وزیر اعظم عمر ان خان با ر ہا مر تبہ اعلا ن بھی کر چکے ہیں اگر حکومت عو ام کو مز ید ریلیف دینے میں کا میا ب نہیں ہو تی تو اس کا نقصان اس کو مستقبل میں اٹھا نا پڑ ے گا جب وہ ووٹ لینے کے لیے عو ام کے پا س جائے گی اس لیے حکومت کو ابھی سے عو ام کو ریلیف دینے کے مز ید اقد اما ت کرنے چاہئیں کیو نکہ ایسا کرنا ہی حکومت کے مفا د میں ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*